عالمی خبریں

ایران میں بیلجیئن شہری کو جاسوسی کے الزام میں 40 برس قید،کوڑوں اور جرمانے کی سزا

خلیج اردو

تہران : ایران میں بیلجیئن شہری اولیور وینڈیکاسٹیلے کو جاسوسی کے الزام میں 40 سال قید، کوڑوں اور جرمانے کی سزا سنا دی گئی۔

ایرانی خبر ایجنسی کے مطابق بیلجیئن شہری کو40 سال قید کے ساتھ 74کوڑوں اور 10 لاکھ ڈالر جرمانے کی سزا بھی سنائی گئی ہے۔

خبررساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ بیلجیئن شہری کو ایران کی جاسوسی کرنے، ایران کے خلاف امریکا سے تعاون کرنے، کرنسی اسمگلنگ اور منی لانڈرنگ کے چار الزامات پر سزا سنائی گئی ہے۔

متعلقہ مضامین / خبریں

سابق سماجی کارکن بیلجیئن شہری اولیور وینڈیکاسٹیلےکو گزشتہ برس فروری میں گرفتار کیا گیا تھا۔

رپورٹس کے مطابق بیلجیئن شہری اس سزا کے خلاف اپیل کر سکتا ہے۔

گزشتہ ہفتے ایرانی میڈیا نے ایک نامعلوم ذرائع کی جانب سے دعویٰ کیا کہ وہ "انسانی ہمدردی کی کوششوں کی آڑ میں دشمن امریکی حکومت کے لیے جاسوسی کرنے اور انسدادِ سلامتی کے شعبوں میں سرگرم گروہوں کو رقوم تقسیم کرنے کے لیے” ایران میں داخل ہوا تھا۔

وینڈیکاسٹیل نے تمام الزامات سے انکار کیا۔ بیلجیئم کے حکام نے اس سے قبل وینڈیکاسٹیل کی قید کی مذمت کرتے ہوئے اسے "غیر قانونی” قرار دیا تھا۔

تہران پر غیر ملکیوں اور دوہری شہریت رکھنے والوں کو سیاسی سودے بازی کے چپس کے طور پر استعمال کرنے کے لیے قید کرنے کا الزام لگایا گیا ہے، اس الزام کی وہ تردید کرتا ہے۔

2018 میں ایک ایرانی سفارت کار اسد اللہ اسدی کی گرفتاری کے بعد ایران اور بیلجیئم کے تعلقات میں تیزی سے تناؤ آ گیا ہے۔ گرفتار سفارتکار پر فرانس میں بم دھماکے کی منصوبہ بندی کرنے کا الزام تھا۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button