عالمی خبریں

مبینہ جاسوس غبارے کا ملبہ ،امریکی نیوی نےملبے کی تصاویریں جاری کر دیں

خلیج اردو

واشنگٹن :امریکی نیوی نے مشتبہ چینی جاسوس غبارے کے بحر اوقیانوس سے ملنے والے ملبے کی تصاویریں جاری کردیں۔

 

امریکی فلِیٹ فورس کمانڈکی طرف سےسوشل پلیٹ فارم پر جاری تصاویر میں نیوی کی اسپیشل ایکسپلوزو ٹیم کے اہکاروں کو چینی غبارے کا ملبہ کشتی میں لاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

متعلقہ مضامین / خبریں

 

برطانوی میڈیا کے مطابق امریکی حکام کا کہنا ہے کہ غبارہ 200 فٹ (60 میٹر) لمبا ہے جبکہ اسکا وزن ہزاروں پاؤنڈز تک ہو سکتا ہے۔ حکام کے مطابق غبارے کی ملنے والی آلات کا تجزیہ کیا جائے گا کہ یہ آلات جاسوسی کیلئے استعمال ہوتے ہیں یا نہیں۔

 

امریکی نیوی کے مطابق غبارے کا ملبہ بحر اوقیانوس میں 11 کلومیٹر تک پھیلا ہوا ہے، ملبہ جمع کرنے کیلئے 2 بحری جہاز متعلقہ مقام پر روانہ کیے جا چکے ہیں جبکہ امریکی فوج نے بھی ملبے کی تلاش کیلئے بغیر ڈرائیور زیر آب چلنے والی گاڑیاں روانہ کی گئی ہیں۔

 

ماہرین کا کہنا ہے کہ غبارے کے ملبے سے امریکا کو چین کی فضائی نگرانی کی ٹینکالوجی اور تکنیک کے ساتھ غبارے کی صلاحیتوں اور اسکے معلومات بھیجنے کے طریقہ کار کو جاننے میں مدد مل سکتی ہے۔

 

غبارے کی دریافت نے ایک سفارتی بحران پیدا کر دیا، امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے فوری طور پر چین کا ویک اینڈ کا دورہ منسوخ کر دیا، غیر ذمہ دارانہ عمل” پر کئی سالوں میں امریکہ اور چین کے درمیان اس طرح کی پہلی اعلیٰ سطحی ملاقات تھی ۔

 

امریکی دفاعی حکام نے سب سے پہلے اعلان کیا کہ وہ جمعرات کو اس عجیب و غریب چیز کا سراغ لگا رہے ہیں، اور اسے گولی مارنے سے پہلے پانی کے اوپر محفوظ ہونے تک انتظار کیا۔

 

امریکی ٹی وی نیٹ ورکس کی فوٹیج میں غبارے کو چھوٹے دھماکے کے بعد سمندر میں گرتے دکھایا گیا ہے۔

 

جمعہ کے روز، پینٹاگون نے کہا کہ ایک دوسرا چینی جاسوس غبارہ دیکھا گیا ہے اس بار لاطینی امریکہ میں کوسٹا ریکا اور وینزویلا کے اوپر دیکھا گیا ہے۔

 

کولمبیا کی فضائیہ کا کہنا ہے کہ 3 فروری کو ملک کی فضائی حدود میں 55,000 فٹ کی بلندی پر ایک شناخت شدہ چیز جس کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ ایک غبارہ ہے کا پتہ چلا ہے.

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button