پاکستانی خبریں

نگران وفاقی کابینہ نے وزارت داخلہ کی سفارش پر عام انتخابات کے پر امن انعقاد کے لئے پاک فوج اور سول آرمڈ فورسز کے دستوں کی تعیناتی کی منظوری دے دی

خلیج اردو
اسلام آباد: نگراں وفاقی کابینہ نے 8 فروری کو ہونے والے جنرل الیکشن میں فوج اور سول آرمڈ فورسز کی تعیناتی کی منظوری دے دی، فوج حساس انتخابی حلقوں میں ریپڈ رسپانس فورس کے طور پر تعینات ہوگی۔اجلاس میں ایف بی آر اصلاحات پر کمیٹی بھی قائم بھی کر دی گئی،

وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت ہوا ،جس میں نگران وفاقی کابینہ نے عام انتخابات میں پاک فوج کی تعیناتی کی منظوری دے دی۔ کابینہ نے وزارت داخلہ کی سمری منظور کرلی جس کے تحت 2 لاکھ 77 ہزار پاک فوج کے افسران و اہلکار الیکشن میں تعینات ہوں گے،اس کے ساتھ رینجرز اور ایف سی اہلکار بھی عام انتخابات میں ڈیوٹی کریں گے۔۔ جبکہ فوج اور سول آرمڈ فورسز حساس حلقوں میں بطورکوئیک ریسپانس فورس فرائض انجام دیں گی۔

 

اجلاس میں ایف بی آر اصلاحات پر کمیٹی بھی قائم بھی کر دی گئی ، جس کی صدارت نگران وزیر خزانہ شمشاد اختر کریں گی ، کمیٹی میں خارجہ، آئی ٹی،قانون و انصاف،کامرس،نجکاری کے وزراء شامل ہیں ، کمیٹی ایف بی آر میں اصلاحات پر سفارشات دے گی۔۔۔۔۔ وفاقی کابینہ نے چیف ایگزیکٹو آفیسر پاکستان سافٹ وئیر ایکپسورٹ بورڈ علی رضا کوعہدے سے ہٹانے کی منظوری دے دی۔

وفاقی کابینہ نے پاور ڈویژن کا سالانہ 600ارب روپے وصولی کا پلان مسترد کردیا ۔۔‏بجلی نادہندگان کے شناختی کارڈ،پاسپورٹ اجرا اور تجدید نہ کرنے،نادہندگان کو بیرون ملک جانے سے روکنے اور بینک اکاونٹ نہ کھولنے کی سفارش مسترد، پاور ڈوژن میں مسلح افواج،انٹیلیجنس ایجنسی،ایف آئی اے کے افسران تعینات کرنے کی سفارش بھی رد کر دی گئی

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button