عالمی خبریں

نو عمر 3 بچیوں کی مبینہ قاتل ماں کی عدالت میں پیشی،عدالت کے باہر سکیورٹی الرٹ

خلیج اردو
یونان: یونان میں اپنی کمسن بچیوں کو مبینہ طور پر قتل کرنے والی 34 سالہ خاتون کو ایتھنز کی ایک عدالت میں پیش کر دیا گیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق رولا پیسپیریگو نامی خاتون پر الزام ہے کہ اس نے 3 سال کے اندر اپنی 3 بیٹیوں کو قتل کیا جبکہ ملزمہ نے اپنے بے قصور ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق خاتون پر الزام ہے کہ اس نے جنوری 2022ء میں اپنی 9 سالہ بیٹی جارجینا کو کیٹامین زہر دے کر قتل کر دیا تھا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ملزمہ کو گرفتار کرنے کے بعد اس کی 2 دیگر بیٹیوں 3 سال کی مالینا اور 6 ماہ کی آئرس کی موت کی بھی تحقیقات شروع کی گئیں جو مشکوک حالات میں انتقال کر گئی تھیں۔

متعلقہ مضامین / خبریں

مرنے والی بچیوں کے طبی معائنے کے نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ دونوں بچیوں کی موت دم گھٹنے سے واقع ہوئی تھی۔
رپورٹس کے مطابق یونان میں ملزمہ کے خلاف شہریوں میں سخت غصہ بھی پایا جاتا ہے جس کے باعث خاتون کو سخت سیکیورٹی میں عدالت لایا گیا۔

یونان میں مبینہ طور پر تین بار بچوں کے قتل کو میڈیا نے بڑے پیمانے پر توجہ حاصل کی ہے، جہاں اس طرح کے جرائم نسبتاً کم ہوتے ہیں۔

اپریل 2022 میں حکومت نے پسپریگو کو قتل کرنے کے مطالبات کے پیش نظر پرسکون رہنے پر زور دیا۔

جب وہ اپنی گرفتاری کے فوراً بعد عدالت میں پیش ہوئی تو اس نے بلٹ پروف جیکٹ پہنی ہوئی تھی اور ہجوم پر قابو پانے کے لیےپولیس تعینات کی گئی تھی اور یہ نعرے لگا رہے تھےقاتل اپنے جرم کا اعتراف کر لو۔”

ایتھنز پینٹیون یونیورسٹی میں کرمنالوجی کی لیکچرر ایفی لیمبروپولو نے کہا کہ لوگ اس حقیقت کو معاف نہیں کر سکتے کہ اس نے مبینہ طور پر ایک نہیں بلکہ تین بچوں کو اور مختلف اوقات میں قتل کیا۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button