عالمی خبریں

15 لاکھ امریکی ڈالر تاوان ادا نہ کرنے پر روسی ہیکرز نے امریکی مریضہ کی برہنہ تصاویر شیئر کر دیں

خلیج اردو
امریکہ : تاوان ادا نہ کرنے پرروسی ہیکرز نے امریکا کی پینسلوینیا کی اسپتال میں زیرعلاج کینسر کی مریضہ کی برہنہ تصاویر شیئر کردی۔

روسی ہیکرز نے 4 مارچ کو امریکی اسپتال لی ویلی ہیلتھ نیٹورک کے ڈیٹا پر سائبر حملہ کیا جس کے بعد 6 مارچ کو اسپتال انتظامیہ نے سائبر حملے کے حوالے سے سکیورٹی اداروں کو آگاہی دی تاہم ہیکرز ہسپتال کا ڈیٹا چرانے میں کامیاب رہے۔

ہیکرز نے اسپتال انتظامیہ کو ای میل کی گئی جس میں انہوں نے لکھا کہ لمبے عرصے سے ہم آپ کے نیٹورک میں موجود تھے اور آپ کا تمام ڈیٹا ہمارے پاس آگیا ہے، جس میں مریضوں کی تفصیلات ان کے پاسپورٹس کی مندرجات، سوال نامے، نجی معلومات اور برہنہ تصاویر شامل ہیں۔

امریکی حکام کے مطابق ڈارک ویب پر ڈیٹا جاری نہ کرنے کے بدلے میں ہیکرز کی جانب سے 15 لاکھ امریکی ڈالرز تاوان کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

متعلقہ مضامین / خبریں

اسپتال کی جانب سے تاوان کی رقم دینے سے انکار کے بعد ہیکرز نے کینسر کی مریضہ کی تفصیلات پر مبنی سات دستاویزات اور ریڈی ایشن اونکولوجی ٹریٹمنٹ لیتے ہوئے تین برہنہ تصاویر کے اسکرین شاٹس سمیت دیگر ڈیٹا ڈارک ویب پر اپلوڈ کر دیا۔

ڈیٹا ڈارک ویب پر اس وقت شائع ہوا جب ہسپتال نے ہیکرز کو ادائیگی کرنے سے انکار کر دیا۔

پنسلوانیا میں مقیم کمپنی نے کہا کہ مریض کا ڈیٹا شائع کرنا قابل نفرت عمل ہے ۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button