پاکستانی خبریں

لیول پلینگ فیلڈ کی درخواست پر تحریک انصاف کے وکلاء کی غیرسنجیدگی،چیف جسٹس کے پکارنے پر پی ٹی آئی وکلاء غائب

خلیج اردو
اسلام آباد: پی ٹی آئی کو مبینہ لیول فیلڈ نہ ملنے پر توہین عدالت کی درخواست ،عدالت عظمی ٘میں کیس تین جنوری کو سماعت کیلیے مقرر،چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ معاملہ سنے گا،تحریک انصاف کے رہنما شعیب شاہین کہتے ہیں کہ نوے فیصد شہریوں کو ووٹ ڈالنے سے محروم رکھا جا رہا ہے ، آپس میں ہی طے کرلیں کس کو جتوانا ہے۔

تحریک انصاف کو مبینہ لیول فیلڈ نہ ملنے کا معاملہ، تحریک انصاف کی توہین عدالت کی درخواست سماعت کیلئے مقرر، سپریم کورٹ کا تین رکنی بینچ 3 جنوری کو سماعت کرے گا، چیف جسٹس قاضی فائزعیسی ، جسٹس محمد علی مظہر، اور جسٹس مسرت ہلالی پر مشتمل بینچ تشکیل۔

اس سےقبل معاملے پر تحریک انصاف کی قانونی ٹیم کی رجسٹرار سپریم کورٹ سے ملاقات بھی ہوئی ، سینئر رہنما شعیب شاہین نے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے استدعا کی کہ ہمیں سنا جائے ،

 

اسلام آباد ہائیکورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وکیلوں کو اٹھایا جارہاہے ،کل لطیف کھوسہ کے بیٹے کو گرفتار کر لیا گیا ، نوے فیصد شہریوں کو حق رائے دہی سے دور رکھا جارہا ہے۔۔۔آپس میں ہی طے کرلیں کس کو جتوانا ہے۔

 

عدالت عظمیٰ میں حلقہ بندیوں سے متعلق کیس کے دوران شعیب شاہین نے چیف جسٹس سے بات کرنے کی اجازت مانگی جس پر جسٹس فائز عیسی بولے کہ وقفے کے بعد آپ کو سنیں گے،تاہم وقفے کے بعد شعیب شاہین اسلام آباد ہائی کورٹ میں بائیومیٹرک کروانے کے باعث سپریم کورٹ نہ پہنچ سکے، وکیل شعیب شاہین کے عدالت پہنچنے سے پہلے بینچ اٹھ گیا۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button