عالمی خبریں

ایشیا کے امیر ترین بھارتی تاجر ٹاپ 10 کی دوڑ سے باہر، جائیداد میں 3 دن میں 68 ارب ڈالر کمی

خلیج اردو

 

ممبئی : شدید الزامات پر بھارتی امیر ترین شخص گوتم اڈانی کی جائیداد میں ایک ہی دن میں 68 ارب ڈالر کی کمی واقع ہوئی ہے۔

 

متعلقہ مضامین / خبریں

برطانوی میڈیا کے مطابق ایشیا کے امیر ترین بھارتی شخص گوتم اڈانی کی کمپنی پر کئی دہائیوں سے اسٹاک مارکیٹ میں ہیرا پھیری اور اکاؤنٹنگ فراڈ کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

 

 

یہ الزامات سرمایہ کاری سے متعلق امریکی تحقیقاتی کمپنی ’ہنڈن برگ ریسرچ‘ کی جانب سے لگائے تھے اور صرف 3 دن کی بازگشت کے بعد گوتم اڈانی کی دولت میں 68 ڈالر تک کی نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔

تاہم بلومبرگ نیوز کی تحقیقاتی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ اڈانی گروپ کی مارکیٹ ویلیو 130 ارب ڈالر سے کم ہوکر 88.2 ارب ڈالر رہ گئی۔

 

 

اثاثوں میں 68 ارب ڈالرز کی کمی کی وجہ سے 60 سالہ گوتم اڈانی فوربز میگزین کے امیر ترین شخصیات کی فہرست میں 3 سے 8 ویں نمبر پر آگئے تاہم اب بھی وہ ایشیا کے امیر ترین شخص ہونے کا اعزاز رکھتے ہیں۔

 

اڈانی گروپ نے ہنڈن برگ کی جانب سے عائد الزامات کو مسترد کرتے ہوئے 413 صفحات پر مبنی وضاحتی بیان میں مؤقف اختیار کیا کہ امریکی کمپنی نے خودمختاری، آبرو اور آئین کے معیار سمیت ملکی ترقی پر حملہ کیا ہے۔

 

 

جس پر ہنڈن برگ ریسرچ نے جواب میں کہا کہ اڈانی گروپ خود کو قومی پرچم میں لپیٹ کر بھارتی عوام کو منظم انداز میں لوٹ رہا ہے اور بھارت کے مستقبل میں رکاوٹ بن کر کھڑا ہے۔۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button